Utha Do Parda Dikha Do Chehra K Noor E Bari Hijab Main Hai

Utha Do Parda Dikha Do Chehra K Noor E Bari Hijab Main Hai
اٹھا دو پردہ دکھا دو چہرہ کہ نور باری حجاب میں ہے

اٹھا دو پردہ دکھا دو چہرہ کہ نور باری حجاب میں ہے
زمانہ تاریک ہو رہا ہےکہ مہر کب سے نقاب میں ہے

انہیں کی بو مایہ سمن ہے انہیں ہے انہیں کا جلوہ چمن چمن ہے
انہیں سے گلشن مہک رہےہیں انہیں کی رنگت گلاب میں ہے

کھڑے ہیں منکر نکیرسرپر نہ کوئ حامی نہ کوئ یاور
بتادو آکر میرےپیمبر کہ مشکل جواب میں ہے

خدائےقہار ہے غضب پر کھلے ہیں بدکاریوں کہ دفتر
بچا لو آکر شفیع محشر تمہارا بندہ عذاب میں ہے

کریم ایسا ملا کہ جس کہ کھلے ہیں ہاتھ اور بھرے خزانے
بتاو اے مفلسو کہ پھر کیوں تمہارا دل اضطراب میں ہے

کریم اپنے کرم کا صدقہ لعیم بے کس کو نہ شرما
تو اور رضا سے حساب لینا رضابھی کوئ حساب میں ہے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

CAPTCHA Image

*

Visit Us On TwitterVisit Us On FacebookVisit Us On YoutubeVisit Us On Linkedin
Web Design BangladeshBangladesh Online Market